روندتا ہے کیوں دلوں کو وقت کا سفاک پیر

peer

روندتا ہے کیوں دلوں کو وقت کا سفاک پیر
ٹوٹتا ہے کیسے انسان کا بھرم لکھنا اسے

تبصرہ کریں