تمہارے خواب سے ہر شب لپٹ کے سوتے ہیں

khwab aur shab

تمہارے خواب سے ہر شب لپٹ کے سوتے ہیں
سزائیں بھیج دو ہم نے خطائیں بھیجی ہیں

تبصرہ کریں