تُم جی کر دیکھ لو حقیقتوں کی گہری وادیوں میں

khawbon ka shehr

تُم جی کر دیکھ لو حقیقتوں کی گہری وادیوں میں
میرے لئیے تو خوابوں کا شہر ہی کافی ہے

تبصرہ کریں