نہ کوئی وعدہ نہ کوئی یقیں نہ کوئی امید

tera intezaar karta

نہ کوئی وعدہ نہ کوئی یقیں نہ کوئی امید
مگر ہمیں تو ترا انتظار کرنا تھا

تبصرہ کریں