اپنی مرضی سے کہاں اپنے سفر کے ہم ہیں

nida fazli safar

اپنی مرضی سے کہاں اپنے سفر کے ہم ہیں
رخ ہواؤں کا جدھر کا ہے ادھر کے ہم ہیں

تبصرہ کریں