ہزار طرح کے تھے رنج پچھلے موسم میں

jamal ehsani

ہزار طرح کے تھے رنج پچھلے موسم میں
پر اتنا تھا کہ کوئی ساتھ رونے والا تھا

تبصرہ کریں