بہت جی چاہتا ہے چیخوں اور چلاؤں میں

urdu ghazal

بہت جی چاہتا ہے چیخوں اور چلاؤں میں
مگر دماغ کہتا ہے حد میں رہ جاؤں میں

سوچتا ہوں کسی دن کہہ دوں اسے دل کی بات
پر زبان کہتی ہے چپ رہ جاؤں میں

بہت کوشش کی دل کی سنوں نہ دماغ کی
مگر خواہش ہے میری ہارتا رہ جاؤں میں

بس اسی باعث اکیلا ہوں خود ہی کو کوستا رہتا ہوں
یہی باقی رہا ٹسوے بہا بہا کر پونچھتا رہ جاؤں میں۔

guest
0 Comments
Inline Feedbacks
تمام تبصرے دیکھیں