جلائے رکھوں گی صبح تک میں تمہارے رستوں میں اپنی آنکھیں

Barishain Bhi Shumar Karna

جلائے رکھوں گی صبح تک میں تمہارے رستوں میں اپنی آنکھیں
مگر کہیں ضبط ٹوٹ جائے تو بارشیں بھی شمار کرنا

تبصرہ کریں