کب ہوئی پیار کی برسات مجھے یاد نہیں

کب ہوئی پیار کی برسات مجھے یاد نہیں
خوف میں ڈوبی ملاقات مجھے یاد نہیں
میں تو مدھوش تھا کچھ اتنا اسکی چاہت میں
اس نے کب چھوڑ دیا ساتھ مجھے یاد نہیں

تبصرہ کریں