تیری یاد کی برف باری کا موسم

تیری یاد کی برف باری کا موسم
سلگتا رہا دِل کے اندر اکیلے
ارادہ تھا جی لو گا تجھ سے بچھڑ کر
گزرتا نہیں اک دسمبر اکیلے

تبصرہ کریں