آج تنہائی کسی ہمدم دیریں کی طرح

faiz-1

آج تنہائی کسی ہمدم دیریں کی طرح
کرنے آئی ہے میری ساقی گیری شام ڈھلے
منتظر بیٹھے ہے ہَم دونوں كے مہتاب ابھرے
اور ترا عکس جھلکنے لگے ہر سائے تلے

تبصرہ کریں