بارش کی تیز بوندوں نے جب دستک دی دروازے پر

بارش کی تیز بوندوں نے جب دستک دی دروازے پر
محسوس ہوا تم آئے ہو ، اندازِ تمھارے جیسا تھا

ہوا كے ہلکی جھونکے کی جب آہٹ ہوئی کھڑکی پر
محسوس ہوا تم آئے ہو ، اندازِ تمھارے جیسا تھا

میں تنہا چلا جب بارش میں ، اک جھونکے نے میرا ساتھ دیا
میں سمجھا تم ہو ساتھ میرے ، احساس تمھارے جیسا تھا

پِھر رک گئی وہ بارش بھی ، رہی نہ باقی آہٹ بھی
میں سمجھا مجھے تم چھوڑ گئے ، اندازِ تمھارے جیسا تھا

تبصرہ کریں