نہ کوئی غم خزاں کا ہے نہ ہے خواہش بہاروں کی

نہ کوئی غم خزاں کا ہے نہ ہے خواہش بہاروں کی
ہمارے ساتھ ہے امجد کسی کی یاد کا موسم

تبصرہ کریں