موج دریا بھی خاموش تھی

موج دریا بھی خاموش تھی
فضا بھی اداس تھی
سکوت تھا ہر طرف پیاس تھی
ان سب کی وجہ ایک ہی بات تھی
وہ رات جدائی کی رات تھی
میں بضد تھی اسے روکنے پر
وہ بھی اڑا رہا جانے پر
ختم کیسے ہوتی بات
اس کو پیاری اس کی انا تھی

شفق

تبصرہ کریں