اس کے آنے سے عید ہوئی

eid-hui

اس کے آنے سے عید ہوئی
چاند چہرہ دکھانے سے عید ہوئی

جس کو چھوڑا تھا کبھی میں نے
اس کے ناز اٹھانے سے عید ہوئی

اس کا شہر تھا اس کی گلی تھی
بس آنے جانے سے عید ہوئی

عامر کہاں تھا کوئی خوش عید پر
اس کے مسکرانے سے عید ہوئی

تبصرہ کریں