تیرا غم کسی کی جان پر بن گیا ہے

tera-gham

تیرا غم کسی کی جان پر بن گیا ہے
تیرا ظلم بتاتا ہے کہ توں جلاد بن گیا ہے
تیری زندگی سے نکل گیا ترس نام کا لفظ
اس لیے اب توں ہر حد کراس کر گیا ہے
تجھے خبر بھی نہیں ہے عثمان
کل بستی میں ایک شخص تیری وجہ سے مرگیا ہے

تبصرہ کریں