روز حساب جب مرا پیش ہو دفتر عمل

allama iqbal shayari

روز حساب جب مرا پیش ہو دفتر عمل
آپ بھی شرمسار ہو مجھ کو بھی شرمسار کر

تبصرہ کریں