ہم فقیروں کی صورتوں پہ نہ جا

4 line poetry

ہم فقیروں کی صورتوں پہ نہ جا
ہم کئی روپ دھار لیتے ہیں

زندگی کے اُداس لمحوں کو
مُسکرا کر گزار لیتے ہیں

تبصرہ کریں