غم پہچان بھی کسی حد تک ہونی چاہیے

gham ki pehchan

غم پہچان بھی کسی حد تک ہونی چاہیے
خوشی کی پہچان بھی تو یہاں ہونی چاہیے

تبصرہ کریں