غم ہی غم ہیں تری امید میں کیا رکھا ہے

eid poetry

غم ہی غم ہیں تری امید میں کیا رکھا ہے
عید آیا کرے اب عید میں کیا رکھا ہے

تبصرہ کریں