دسمبر کی دھند بھری رات میں

decemer ki raat

دسمبر کی دھند بھری رات میں
ماضی کی اک رات
میں گزرے
حسیں لمحوں
کی یاد میں
میرے دل میں جاگے
جذبوں
نے
اک آ گ
سی لگا رکھی ہے

تبصرہ کریں