بہت غرور ہے دریا کو اپنے ہونے پر

bohat ghuror hai

بہت غرور ہے دریا کو اپنے ہونے پر
جو میری پیاس سے الجھے تو دھجیاں اڑ جائیں

تبصرہ کریں