بگڑوں جو کسی بات پہ، سنبھلتا نہیں ہوں میں

badalta nahi hon mein poetry

بگڑوں جو کسی بات پہ، سنبھلتا نہیں ہوں میں
جو ٹھان لوں اک بار تو، بدلتا نہیں ہوں میں

تبصرہ کریں