رہنے دو اب کے تم بھی مجھے پڑھ نہ سکو گے

sad urdu poetry barsat

رہنے دو اب کے تم بھی مجھے پڑھ نہ سکو گے
برسات میں کاغذ کی طرح بھیگ گیا ہوں میں

تبصرہ کریں