اب کے خود سے بھی الفت نہیں مجھ کو

aadat nahi mujh ko

اب کے خود سے بھی الفت نہیں مجھ کو
تیرے سوا کسی اور کی عادت نہیں مجھ کو

رفتہ رفتہ یہ ہنر بھی سیکھ جاؤں گا
ابھی روٹھوں کو منانے کی عادت نہیں مجھ کو

تبصرہ کریں