خوداریوں كے خون کو ارزاں نہ کر سکے

Sahir-Ludhianvi-poetry

خوداریوں كے خون کو ارزاں نہ کر سکے
ہَم اپنے جوہروں کو نمایاں نہ کر سکے

کس درجہ دِل شکن تھے محبت كے حادثے
ہَم زندگی میں پِھر کوئی اَرْماں نہ کر سکے

تبصرہ کریں