تیرا حُسْن ہو میرا عشق ہو

tera-husn-ho-mera-ishq-ho

تیرا حُسْن ہو میرا عشق ہو
پھر حُسْن وعشق کی بات ہو
کبھی میں ملوں ، کبھی تو ملے
کبھی ہم ملیں ملاقات ہو

کبھی تو ہو چُپ ، کبھی میں چُپ
کبھی دونوں ہم چُپ چاپ ہوں
کبھی گفتگو ، کبھی تزکرے
کوئی ذکر ہو کوئی بات ہو
کبھی ہجر ہو تو دن کو ہو
کبھی وصل ہو تو وہ رات ہو
کبھی الفتیں ، کبھی نفرتیں
کبھی جیت ہو ، کبھی مات ہو
کبھی پھول ہو ، کبھی دھول ہو
کبھی یاد ہو ، کبھی بھول ہو
رہیں مسکوراتی پیار میں
کھلیں پھول بن کے بہار میں
نا زمیں کوئی ، نا فلک کوئی
نا وجود ہو ، نا ہی ذات ہو
صرف
تیرا حُسْن ہو میرا عشق ہو
تیری ذات میں میری ذات ہو

تبصرہ کریں