ہمیں کیا پتہ تھا كے یہ زندگی اتنی انمول ہے

anmol-zindagi-poetry

ہمیں کیا پتہ تھا كے یہ زندگی اتنی انمول ہے
کفن کھول کر دیکھا تو نفرت کرنے والے بھی رو پڑے

تبصرہ کریں