تم کیوں بنے تھے دِل کا سہارا ، جواب دو

jawab-do

تم کیوں بنے تھے دِل کا سہارا ، جواب دو
اب کہاں ہے وہ پیار تمہارا ، جواب دو

کس کو تھا ناز اپنی اداؤں پہ ہر گھڑی
کس نے کیا وفا سے کنارہ ، جواب دو

ہَم تو سہہ نہ سکے گے جدائی کا غم
یہ قول تھا میرے کے تمہارا ، جواب دو

اک طرف زندگی ، اک طرف موت ہے
اب کس طرف کرو گے اشارہ ، جواب دو

تبصرہ کریں