میں کیسے سرد ہاتھوں سے تمھارے گال چھوتا تھا

december-wasi-shah-poetry

میں کیسے سرد ہاتھوں سے تمھارے گال چھوتا تھا
دسمبر میں تمھیں میری شرارت یاد آئے گی

تبصرہ کریں