تمھارے دکھ ہم سہہ نہیں سکتے

تمھارے دکھ ہم سہہ نہیں سکتے
بھری محفل میں کچھ کہہ نہیں سکتے
ہمارے گرتے ہوئے آنسوں کو بار بار دیکھ کر
وہ بھی کہتے ہیں کہہ ہم آپ کے بن رہ نہیں سکتے

تبصرہ کریں