خودی میں ڈوب ، زمانے سے نا امید نہ ہو

خودی میں ڈوب ، زمانے سے نا امید نہ ہو
کہ اس کا زخم ہے درپردہ اہتمام رفو

تبصرہ کریں