کب ٹھہرے گا درد اے دِل ، کب رات بسر ہو گی

faiz-ahmad-faiz-poetry

کب ٹھہرے گا درد اے دِل ، کب رات بسر ہو گی
سنتے تھے وہ آئیں گے ، سنتے تھے سحر ہو گی

تبصرہ کریں