میر ان نیم باز آنكھوں میں

mir-taqi-mir-poetry

میر ان نیم باز آنكھوں میں
ساری مستی شراب کی سی ہے

دیکھ تو دِل كے جاں سے اٹھتا ہے
یہ دھواں سا کہاں سے اٹھتا ہے

تبصرہ کریں