جب چلے تو تنہا تھے سفر میں محسن

mohsin-naqvi-poetry-in-urdu

جب چلے تو تنہا تھے سفر میں محسن
پِھر تم ملے غم ملے تنہائی ملی قافلہ سا بن گیا

تبصرہ کریں