ڈوبتے ڈوبتے کشتی کو اچھالا دے دوں

ڈوبتے ڈوبتے کشتی کو اچھالا دے دوں
میں نہیں کوئی تو ساحل پر اُتَر جائے گا
ضبط لازم ہے مگر دکھ ہے قیامت کا فراز
ظالم اب كے بھی نہ روئے گا تو مر جائے گا

تبصرہ کریں