محبت تو بارش ہے

محبت تو بارش ہے
جسے چھونے کی خواہش میں
ہتھیلیاں گھیلی ہو جاتی ہیں
مگر ہاتھ ہمیشہ خالی ہی رہتے ہیں

تبصرہ کریں