میں تجھ کو پانے کی حسرت میں کب تک ذلت اٹھاتا رہوں

میں تجھ کو پانے کی حسرت میں کب تک ذلت اٹھاتا رہوں
کوئی ایسا دے مجھے دھوکہ كہ میری آس ٹوٹ جائے

تبصرہ کریں