جو بارش کی تمنا ہے تو ان آنکھوں میں آ بیٹھو

جو بارش کی تمنا ہے تو ان آنکھوں میں آ بیٹھو
وہ برسوں میں کہیں برسیں یہ برسوں سے برستی ہے

تبصرہ کریں