دل نا امید تو نہیں ، ناكام ہی تو ہے

دل نا امید تو نہیں ، ناكام ہی تو ہے
لمبی ہے غم کی شام ، مگر شام ہی تو ہے

تبصرہ کریں